آپﷺ کےفرمان پاک زندگی کے بارے میں

 آپﷺ کے والدین اولاد بیویوں گھر والو مہمانوں عورتوں مردوں اور اولاد کی شادی کے بارے  میں فرمان پاک

 

آپﷺ نے فرمایا تم میں سے اچھے وہ ہیں جو اپنی بیویوں  کے حق میں اچھے ہیں۔

آپﷺ نے فرمایا دین دیکھواخلاق دیکھو اور رشتہ کر دو اگر بچہ اپنی پسند کا اظھار کرے تو اسے نافرمانی نہ سمجھو اور اگر بیٹی اپنی پسند کا اظھار کرےدے کے میری شادی یہاں کرو تو اسے بے قدر بے حیا نہ سمجھو۔

آپﷺ نے فرمایا شرم اور  حیا ء سے ہمیشہ خیر ملتی ہے۔

آپﷺ نے فرمایا کسی عورت کے لیے جو اللہ اور یوم آخرت پرایمان رکھتی ہو حلال نہیں کے وہ  تین دن یا اس سے زیادہ دن کا سفرکرے اور اس کے ساتھ اس کا خاوند   یا اس کا والد یا اس کا بھائی  یا اس کا بیٹا یا اس کا کوئی اور محرم ساتھ  نہ ہو۔

آپﷺ نے فرمایا جب عورت پانچ وقت کی نماز پڑتی رہے اور اپنی عزت کی حفاظت کرے  اور اپنے شوہر کی فرمانبردار بن کر رہے تو وہ عورت جنت کے جس مرضی دروازے سے دل کرے داخل ہو جائے۔

آپﷺ نے فرمایا حمل کے بعد عورت کو پہلی غذا کھجور دیں۔

آپﷺ نے فرمایا اپنے بیوی بچوں کے ساتھ بیٹھنا مسجد میں اعتکاف میں بیٹھنے سے زیادہ محبوب اور پسندیدہ عمل ہے۔

آپﷺ نے فرمایا اپنے والد کو نام سے نہ پکارا کرو اور نہ ان سے پہلے بیٹھا کرواور نہ ان سے آگے چلا کرو۔

آپﷺ نے فرمایا لوگوں میں بد ترین شخص وہ ہے جو اپنے گھر والوں کے حق میں تنگی کرنے والا ہو۔

آپﷺ نے فرمایا وہ شخص ہم میں سے نہیں جو چھوٹوں  پر رحم نہ کرے اور بڑوں کی عزت نہ کرے۔

آپﷺ نے فرمایا دوسروں کی عورتوں سے دور رہو تمہاری عورتیں بھی پاکیزہ دامن رہیں گی اور اپنے والدین کے ساتھ اچھا برتاؤ کرو تمہاری اولاد بھی تم سے حسن سلوک کرے گی۔

آپﷺ نے فرمایا  بلند مرتبہ اور نیک لوگ اپنی بیویوں کی عزت کرتے ہیں پست ذہن والے اور نیچ لوگ ان کی توہین کرتے ہیں۔

آپﷺ نے فرمایا بہترین مرد وہ ہے جو جو دیر سے ناراض ہوتا ہے اور راضی جلدی ہو جاتا ہے۔

حضرت علیؓ نے فرمایا تمہاری عورتوں میں سب سے بہترین وہ ہیں جو اپنی سیرت  میں پاک دامن اور اپنے خاوند کو بہت زیادہ  پسند کرنے والی ہو۔

آپﷺ نے فرمایا اپنی جانوں اور نہ اپنی اولاد اور نہ اپنے اموال کے لیے بد دعا کرو کہیں ایسا نہ ہو کے وہ اللہ کے ہاں مقبولیت والی گھڑی ہو اور تمہاری بد دعا تمہارے حق میں قبول ہو جائے۔

آپﷺ نے فرمایا خرچ کی ابتدا ان لوگوں سے کرو جن کے اخراجات زندگی کے تم ذمے دار ہو۔

آپﷺ نے فرمایا ماں باپ کی خدمت اور اطاعت سے رزق اور عمر میں برکت ہوتی ہے۔

آپﷺ نے فرمایا اگر تم اپنے دلوں کو نرم کرنا چاہتے ہو تو مسکینوں کو کھانا کھلاؤ اور یتیموں کے سروں پر شفقت سے ہاتھ پھیرو۔

آپﷺ نے فرمایا بیشک اللہ تم کو اپنی ماؤں کے ساتھ حسن سلوک کی (اچھے برتاؤ) وصیت کرتا ہے یہ جملہ آپ نے تین بار ارشاد فرمایا۔

آپﷺ نے فرمایا مہمان اپنا رزق لے کر آتا ہے اور صاحب خانہ کے گناہ لے کر جاتا ہے۔

آپﷺ نے فرمایا اگر کسی نے غصے کا گھونٹ صرف اللہ کی خوشی کے لیے پیا اس نے اس سے بہتر اور اعلی چیز نہیں پی۔

آپﷺ نے فرمایا اللہ نے تم پر ماں کی نافرمانی حرام قرار دی ہے اور والدین سے ناحق فضول مطالبے کرنا بھی حرام قرار دیا ہے۔

آپﷺ نے فرمایا چھوٹے بھائیوں پر بڑے بھائیوں کا ایسا ہی حق ہے جیسے  باپ کا بیٹے پر۔

 Hadees Nabvi s a w

Leave a Comment

Translate »