شلغم کے فوائد

مزاج

شلغم کا مزاج گرم وتر ہے.

غزائی اجزاء

جسمانی قوت بخشنے والے اجزاء 3 فیصد پروٹین 4 فیصد چونا 29 فیصد فاسفورس 11 فیصد   لوہا 9 فیصد  کیلشیم وٹامن بی اس کے علاوہ سوڈیم فولاد اور پوٹاس بھی اس میں بخوبی شامل ہوتے ہیں.

شلغم پکانے کا طریقہ

شلغم ذیا بیطس کے مریضوں کے لیے خاص طور پر مفید ہے اسے پکانے میں اکثر یہ غلطی کی جاتی ہے کہ اس کی صرف جڑ کو پکایا جاتا ہے اور سبز پتوں کو پھینک دیا جاتا ہے ہری سبزیاں بناتے وقت یہ خیال رکھنا چاہیے کہ پتوں کو ملا کر سبزی بنائی جائے تو زیادہ فائدہ ہوتا ہے پھر شلغم کے پتوں میں تو جڑ کی نسبت زیادہ مقوی اجزاء ہوتے ہیں یہ اجزاء جسم کی نشوونما کے لیے نہایت ضروری ہیں.

شلغم پکانے کا طریقہ

فوائد 

بچوں کے لیے خصوصا کیلشیم کی کمی والے لوگوں کے لیے شلغم کا رس بہت مفید دوا ہے ایسے لوگوں کو روزانہ یہ رس لینا چاہیے اس لیے شلغم کے چھلکے دار حصے کا رس خون میں ترشی بڑھانے کے لیے خاص طور سے مفید ہے پورا فائدہ اٹھانے کے لیے زیادہ سے زیاده شلغم پتوں سمیت کھایئے شلغم وٹامن بی کا خزانہ ہے اگر چہ اس میں دیگر وٹامن بھی ہوتے ہیں.

یہ نہایت عمدہ تر کاریوں میں سے ہے یہ بدن کو کافی غذائیت دیتی ہے ملین بھی ہے قبض کو دور کرتی ہے اور بینائی کو بڑھاتی ہے پیشاب بھی لاتی ہے خصوصا جب اس کو پتوں سمیت پکا کر کھایا جائے تو اس کی پیشاب لانے کی تاثیر بڑھ جاتی ہے ان فوائد کی وجہ سے شلغم عام جسمانی کمزوری ضعف بصارت ضعف باہ قبض کھانسی دمہ اور وجع مفاصل جیسے امراض میں خصوصیت سے مفید ہے نیز سنگ گردہ و مثانہ میں بھی نافع ہے.

شلغم کے چھوٹے بچوں کیلیے فوائد 

چھوٹے بچوں کے لیے جو عام جسمانی کمزوری اور دق الاطفال (سوکھا ) کے مریض ہوں کچے یا پکے ہوئے شلغم کھلا نا ان کا رس نکال کر پلانا مفید ہے شلغم میں چقندر اور گاجروں کے مقابلے میں کاربوہائیڈریٹس کم ہوتے ہیں اور نشاستہ تو بالکل نہیں ہوتا اس لیے ذیابیطس کے مریضوں کو اسے ابال کر استعال کرایا جاسکتا ہے.

شلغم کے چھوٹے بچوں کیلیے فوائد 

شلغم کی ایک خصوصیت یہ بھی ہے کہ اس میں کیلشیم و چونا دوسری جڑیلی ترکاریوں کے مقابلہ میں زیادہ پایا جاتا ہے شلغم میں فولاد اور پوٹاس بھی دوسری ترکاریوں کے مقابلہ میں زیادہ ہوتے ہیں.

شلغم کا شربت کھانسی کیلیے 

پرانی کھانسی میں شلغم کے جوش کرده عرق میں شہد خالص ملاکر پلانا غایت درجہ مفید ہے شلغم سے کھانسی کا شربت بنانے کی دوسری ترکیب یہ ہے کہ کچھ شلغم  لے کر انھیں کدوکس میں کس لیا جائے اور ان کو نچوڑ کر عرق نکال لیا جائے اس میں شکر سفید یا شہد خالص چار پانچ اونس ملا کر آگ پر چڑھا دیا جائے جب وہ ذرا گاڑھا ہو جائے تو اتار کر ٹھنڈا کر لیا جائے. 

شلغم کا شربت کھانسی کیلیے 

مقدار خوراک

دن میں دو تین مرتبہ ایک چمچہ چائے کی مقدار میں روزانہ استعمال کیا جائے.

Leave a Comment

Translate »